گوگل کی نوکری چھوڑ کر پاکستان آنے والی تانیہ ادریس

گوگل کی نوکری چھوڑ کر پاکستان آنے والی تانیہ ادریس
گوگل کی نوکری چھوڑ کر پاکستان آنے والی تانیہ ادریس

پاکستان میں وزیر اعظم عمران خان ڈیجیٹل پاکستان منصوبہ شروع کرنے جا رہے ہیں جس  کے لیے گوگل کی سینئر پاکستانی ایگزیکٹو تانیہ ادریس نے استعفیٰ دے دیا۔ گوگل کی سینئر پاکستانی ایگزیکٹو تانیہ ادریس مستعفٰی ہو کر سنگاپور سے پاکستان پہنچ گئیں۔ تانیہ ادریس 20 سال سے بیرون ملک مقیم تھی اور پاکستان کے لیے کچھ کرنا چاہتی تھی۔
جب تحریک انصاف کی حکومت آئی تو ان کے   جہانگیر ترین سے اہم رابطے ہوئے اور انہوں نے تانیہ ادریس کو حکومت کے ڈیجیٹلائزیشن منصوبے کے بارے میں بتایا،اس  منصوبے کے تحت پانچ  اہم مراحل  پر کام تیزی سے کیا جائے گا، عوام کی انٹرنیٹ تک رسائی کو فروغ دیا جائے گا۔
انھوں نے کہا کہ انٹرنیٹ کی رسائی ہر پاکستانی کا بنیادی حق ہے، ملک میں ڈیجیٹل انفرا اسٹرکچر قائم کیا جائے گا تاکہ کام تیز اور بہتر ہو، ڈیجیٹل انفرا اسٹرکچر بنانا حکومت کا کام ہے، پاکستان کی 70 ملین آبادی انٹرنیٹ استعمال کر رہی ہے، پاکستان میں ڈیجیٹلائزیشن کے شعبے میں انقلاب لایا جا سکتا ہے۔
تانیہ ادریس نے کہاکہ ای گورنمنٹ سے حکومتی فیصلوں کو پیپرلیس بنایا جائے گا، عوام کو چھوٹی چیزوں کے لیے لائنوں میں کھڑا کر دیا جاتا ہے، فنگر پرنٹس کے باوجود لائنوں میں کھڑا رکھنے کا جواز نہیں، شہری کی شناخت کو ڈیجیٹل طریقے سے استعمال کیا جائے گا، ڈیجیٹل اسکلنگ سے نوجوانوں کو معیاری اسکلز ملیں گی، کاروبار کے لیے بینکنگ نظام، سرمایہ کاروں کو سازگار ماحول دیں گے۔پاکستان میں ڈیجیٹلائزیشن کے دور کا آغاز ہونے جا رہا ہے۔

Post a Comment

0 Comments