مکھیوں کا لالچ Urdu stories for kids

مکھیوں کا لالچ  Urdu stories for kids
مکھیوں کا لالچ Urdu stories for kids
مکھیوں کا لالچ Urdu stories for kids
ایک دفعہ ایک دکاندار ا گاہک کو شہد بیچ رہا تھا کہ اچانک دُکاندار کے ہاتھ سے شہد کی بوتل پھسل کر گر گئی شہد دکان کے فرش پر گر گیا ۔ جتنا شہد فرش کے اوپراوپر سے اٹھایا جا سکتا تھا اتنا شہد دُکاندار نے اٹھا لیا ۔شہد کی کچھ مقدار فر ش پر رہ گئی تھی ۔ کچھ دیر میں بہت سی مکھیاں اس فرش پر گرے ہوئے شہد پر آکر بیٹھ گئی، شہد کی مٹھاس انہیں 
بہت پسند آئی مکھیاں جلدی جلدی اسے کھانے لگی، جب تک ان کا پیٹ بھرا نہیں وہ شہد کھاتی رہی ۔
جب مکھیوں کا پیٹ بھر گیا اور انہوں نےاُڑنا چاہا، تو وہ اُڑ نا سکیں ۔ مکھیوں کے پر شہد سے چپک گئے تھے۔ وہ جتنی طاقت سے  اُڑنے کی کوشش کرتی ان کے پر اتنا ہی چپک جاتے، ان کے سارے جسم پر شہد لگتا جاتا۔ بہت سی مکھیاں کوشش کرتے کرتے مر گئی، کچھ اس شہد میں اُڑنے کی نا کام کوشش کرتی رہی ،اتنے میں اور بھی بہت سی مکھیاں اُڑ کر شہد کھانے کے لیے آ رہی تھی۔ مری ہوئی اور شہد کی مکھیوں کو دیکھ کر بھی دوسری آنے والی مکھیاں شہد کھانے کا لالچ چھوڑ نہیں سکی ۔ مکھیوں کی بیوقوفی دیکھ کر دُکاندار بولا ، جو لوگ زبان کے چسکے میں پڑ جاتے ہیں وہ ان مکھیوں کی  طرح بیوقوف ہوتے ہیں ۔ چسکے (مزے) کا تھوڑی دیر کا سُکھ اُٹھانے کے لالچ میں وہ اپنی صحت کو نقصان پہنچاتے ہیں ، مریض بن کر ٹرپتے ہیں اور جلد ہی مر جاتے ہیں۔

Post a Comment

0 Comments