قوت ارادی، اگرآپ کوہر کام ناممکن لگتا ہے، تو پھر اس اسٹوری کوضرور پڑھیں

قوت ارادی
اگرآپ کوہر کام ناممکن لگتا ہے، تو پھر اس اسٹوری کوضرور  پڑھیں
قوت ارادی
قوت ارادی
 ایک بہت بوڑھا آدمی تھا ، اس کا ایک بیٹا تھا اور وہ جیل میں  قید تھا ۔ جب اس بوڑھے آدمی کے کھیت میں گندم کی فصل بونے  کا وقت قریب آیا تو وہ بہت افسردہ ہوا کہ اب وہ کھیت میں تنہا فصل کیسے بوئے گا۔اسی وجہ سے اس نے جیل میں اپنے بیٹے کو خط لکھا اور اس خط میں اس نے اپنی ساری پریشانی بیان کردی۔
میرے  بیٹے میں بوڑھا ہو گیا ہوں ، اب میں اکیلا فصل    بو نے  کا کام نہیں کر سکتا ،  اگر تم میرے  ساتھ ہوتے تو مجھے کچھ مدد مل جاتی ، خدا جانتا ہے کہ اب میں اس کھیت میں گندم  بونے کا کام کیسے  کروں گا۔
بیٹے کو اپنے بوڑھے والد کا خط پڑھ کر بہت تکلیف ہوئی ، وہ ایک طرح سے اپنے والد کی مدد کرنا چاہتا تھا ، لہذا کافی دیر سوچنے کے بعد اس نے اپنے والد کو ایک خط لکھا۔ اس خط میں یہ لکھا گیا تھا، آپ اس سال کھیت میں فصل بونے کا کام نہیں کریں گے ، کیونکہ میں نے اپنے کھیتوں میں کچھ بارود اور  بندوقیں  دبا رکھی  ہیں ، اگر آپ نے کھیت کھودا تو  بندوقیں اور باردو  کسی کے ہاتھ میں آجائے گا اور میں مشکل میں  پڑ جاؤں گا۔
جیسے ہی پولیس کو اس خط کے بارے میں معلوم ہوا ، پولیس کی ایک بڑی ٹیم کھیت  میں پہنچی اور پولیس نے ہتھیاروں  کو ڈھونڈنے کے لئے پورا کھیت کھود ڈالا  ، لیکن ہتھیاروں  کا کہیں پتہ نہیں چل پایا  ، بالآخر پولیس کی پوری ٹیم تھک ہار کر واپس چلی گئی۔
اگلے ہی دن اس بوڑھے آدمی نے پھر جیل میں اپنے بیٹے کو خط لکھ کر کہا ، "بیٹا ، یہ سب کیا تھا؟" میں  اب کیا کروں؟بیٹے نے اپنے والد کو لکھا اور کہاابا   آپ کو ابھی کچھ کرنے کی ضرورت نہیں ہے ، ابھی آپ کھیت میں آرام سےگندم کی فصل  بونے  کا کام کریں  ، کھیت کی کھدائی کا کام مکمل ہو چکا ہے ، میں صرف جیل میں رہ کر آپ کی اتنی ہی مدد کرسکتا تھا۔
دوستو ، ہمیں اس کہانی سے یہ سبق ملتا ہے کہ اگر ہمارے اندر کچھ کرنے کی قوت ارادی موجود ہوتی  ہے تو ہم دنیا کی سب سے بڑی مشکل کو بھی ہرا سکتے ہیں ، چاہے ہم دنیا کے کسی بھی کونے میں بیٹھے ہوئے ہوں ، صرف ذہن کے ساتھ کام کرنے کی ضرورت ہے۔

Post a Comment

0 Comments