انسان کی قیمت کیا ہو سکتی ہے Insan ki kimat kya ho sakti hai

انسان کی قیمت  کیا ہو سکتی ہے Insan ki kimat kya ho sakti hai

انسان کی قیمت  کیا ہو سکتی ہے Insan ki kimat kya ho sakti hai

انسان کی قیمت  کیا ہو سکتی ہے Insan ki kimat kya ho sakti hai

ایک  لوہار    کی اپنی دکان  تھی  کام  زیادہ   ہوتا  تھا   لوہار اپنے  کام  کو پورا نہیں  کر پاتا تھا  ،  ایک  دن لوہار  نے  فیصلہ  کیا کہ  اپنے  بیٹے  کو  بھی  دکان   پر لایا کرے  جس سے  اس    کو کام میں  تھوڑی مدد  ملے  گی ،  لوہار کا  بیٹا   جب  دکان   پر  آیا   تو  اپنے  باپ  سے    وہاں  موجود  چیزوں  کے   ریٹ   پوچھنے  لگا،  اچانک   بیٹے   نے  پوچھا ،   ابو  انسان کی  کیا  قمیت  ہو سکتی ہے؟

لوہار نے  بیٹے سے  کہا " بیٹا  انسان کی  کوئی  قیمت  نہیں  لگائی جا سکتی،    یوں  سمجھ لو کہ انسان کی قمیت لگانا ناممکن   ہے" ہر انسان   اپنی  جگہ  پر  قیمتی  اور انمول  ہے،  بیٹے  نے  تجسس سے     پوچھا  ابو  پھر   کچھ  انسان امیر اور  کچھ  انسان  غریب  کیوں  ہوتے ہیں، کوئی  اچھا  اور کوئی  بُرا کیوں   ہوتا ہے،؟

لوہار نے   ایک پرانے  لوہے  کے  ٹکڑے  کی    طرف   اشارہ  کر  کےبیٹے   کو کہا  کہ  اس  لوہے کے ٹکڑے  کی قیمت  کیا ہو  گی ؟  بیٹے  نے  کہا   یہ  تو عام  سا لوہے  کا ٹکڑا ہے ،   وزن   کے  حساب سے   کوئی   خریدے  گا،  اور   فی   کلو   لوہے  کی قیمت  وہی لگائی جائے  گی  جو  اس وقت  پرانے لوہے کی قیمت   مارکیٹ  میں  چل رہی ہو گی ، لوہار نے اپنے  بیٹے سے  کہا اگر اس لوہے کے پرانے  ٹکڑے کوبھٹی میں  گرم  کرکے   کوئی  اوزار  یا  کوئی  استعمال کی چیز  بنا دی جائے   تب  اس کی  قیمت کیا ہوگی؟  بیٹے  نے  کہا   پھر یہ لوہے کا ٹکڑا مہنگا   ہو جائے  گا اس کی ویلیو بڑھ  جائے  گی ، کیونکہ  اس   پر ہم نے  محنت کی ہو گی  اور گاریگری  دیکھائی    ہو گی،  اس لوہے  سے  بننے  والی  چیز  یا اوزار استعمال کے   قابل  ہو  گا  کوئی  بھی اسے  اپنے کام کیلئے  خریدے  گا۔

لوہار نے اپنے بیٹے  سے  کہا  بلکل   اس  لوہے   کے  پرانے  ٹکڑے  کی  طرح  سب لوگ  ایک جیسے  ہوتے ہیں ،  فرق صرف محنت  کا ہوتا ہے ،  کوئی  محنت  کرتا ہے   خود کو چمکاتا ہے ،   خو د کو قیمتی   بناتا ہے،  ویلیو ایڈ  کرتا ہے ،  یہی  چیز یں  کسی  بھی انسان  کو  عام   انسانوں  سے مختلف  اور قیمتی بناتی  ہیں، اس دنیا  میں   آنے کا اپنی زندگی  کا  مقصد  پہچانیں  اور  اس مقصد ، منزل  کو حاصل  کرنے  کے لیے   کوشش کریں  ،  ہماری  یہی محنت ، کوشش ہمیں  عام انسان سے خاص انسان  بناتی ہے۔

  

Post a Comment

0 Comments