یقین کی طاقت سے ہر میدان میں کامیابی حاصل کریں kamyabi Hasil karen

یقین کی  طاقت  سے   ہر میدان میں کامیابی حاصل کریں  kamyabi Hasil karen

یقین کی  طاقت  سے   ہر میدان میں کامیابی حاصل کریں  kamyabi Hasil karen

یقین کی  طاقت  سے   ہر میدان میں کامیابی حاصل کریں  kamyabi Hasil karen 

ایک  بادشاہ اپنے  دربار میں بیٹھا سلطنت کے معملات دیکھ رہا  تھا کہ  اسے  خبر ملی  ایک بڑی  فوج  ان پر  حملہ  آور ہونے   کیلئے  نکل  پڑی ہے ، دُشمن فوج کی تعداد دو گنا اور بہتر ساز و سامان سے آراستہ تھی،  فوج اور عمائدین سلطنت مشورے کیلئے بیٹھی،   ہر کوئی پریشان  تھااکثریت کی رائے تھی شہر خالی کر دیا جائے کہ یہ ایک یکطرفہ جنگ ہوگی اور اس جنگ میں کامیابی  ناممکن سی  بات ہے،

اسی سلطنت کے باہر ایک بزرگ کی کٹیا تھی جس سے وہاں  رہنے والے  لوگوں کی  بڑی عقیدت تھی،  بادشاہ نے سپہ سالار اور عمائدین سے کہا آپ سب اس بزرگ کے پاس جائیں اور اس سے بھی مشورہ کر لیں کیا ہمیں یہ جنگ  لڑنی  چاہیے ؟ یا پھر  بغیر  جنگ لڑے اور خون  خرابے  کےبغیر  ہتھیار ڈال دینے چاہیں ،  بزرگ کو جب یہ بات بتائی گئی تو اُس نے کہا مجھے کچھ وقت دو،  میں مراقبہ کرتا ہوں،  اگر فتح نظر آئی تو پھر جنگ چھوڑ کر جانے کی ضرورت  نہیں ، لیکن اگر شکست نظر آئی تو پھر اس لاحاصل جنگ کا  کوئی  فائدہ نہیں ، بہتر ہو  گا ہتھیار ڈال  دئیے  جائیں،

کافی دیر کے مراقبہ کے بعد بزرگ نے کہا ہمیں اس جنگ میں فتح  حاصل ہو گی ،  مقابلہ کی تیاری کرو،  فوجی بھرپور عزم سے سرشار جنگ کے میدان کی طرف نکل گئے،  ایک بڑی جنگ ہوئی اور دُشمن کو شکست  ہوئی ، بزرگ کو جب نتیجہ بتایا گیا تو اُس نے کہا میں نے تو صرف ہمت کی دعا کی تھی،  ہماری فوج و عوام میں شکست کا خوف تھا،   یہ خوف ان کو جنگ سے پہلے  ہار ماننے  پر مجبور کر  چکا تھا،  اس جنگ میں کامیابی فتح کی یقین دہانی نے ممکن بنادی،

ہمارا بھی یہی مسئلہ ہوتا ہے،  جیسے اندھیرے سے ڈرتے ہوئے بچے کو ہم یقین دلاتے ہیں میں تمہارے ساتھ ہوں،  ایسے ہی ہمارے اندر کا بچہ اپنے خوف کیلئے یقین دہانی چاہتا ہے،  ہمارا خوف ہم سے ہمارا یقین چھین لیتا ہے،  ہم پھر یقین دہانیاں، ضمانت اور گارنٹی ڈھونڈ رہے ہوتے ہیں،  اللہ رب العزت کی ذات پر یقین ہو توتب فتح بھی ہماری ہوتی ہے۔

  

Post a Comment

0 Comments